کافر اور غیر مسلم میں فرق

کافر اور غیر مسلم میں فرق

سوال: کافر اور غیر مسلم میں کیا فرق ہے؟(عبدالعزیز)
جواب:کافر سے مراد وہ شخص ہے جو جان بوجھ کر حق کا انکار کرتا ہے، یعنی جس کے سامنے اسلام پیش کیا گیا یا اس نے خود اسے پڑھا اور قرآن وغیرہ کا مطالعہ کیا اور اسے اس بات کی سمجھ آ گئی کہ یہ حق ہے اور اسے قبول کرنا اس کے لیے ضروری ہے، لیکن اس نے جان بوجھ کر اس حق کو جھٹلا دیا اور اسے نہیں مانا تو یہ شخص خدا کے نزدیک کافر شمار ہو گا، لیکن ہم چونکہ اس کے دل میں جھانک کر یہ فیصلہ نہیں کر سکتے کہ اس نے جان بوجھ کر جھٹلایا ہے یا وہ معذور تھا، اس لیے ہم اسے کافر نہیں کہہ سکتے۔ جبکہ غیر مسلم سے وہ شخص مراد ہے جو مسلمان ہیں ہے۔ اس نے جان بوجھ کر کسی حق کا انکار کیا ہے یا نہیں،یہ ہم نہیں جانتے ۔چنانچہ قیامت کے دن خدا اس کا فیصلہ کر ے گا۔

غیر مسلم کی نجات

سوال: سورۂ مائدہ (۵) کی آیت ۶۹ کا ترجمہ ہے: ’’بے شک کوئی مسلمان ہو ، یہودی ہو، صابی ہواور نصرانی ہو، جو کوئی بھی اللہ پر اور آخرت پر ایمان رکھے گااور نیک اعمال کرے گاتو اس کے لیے کوئی خوف اور رنج کا مقام نہیں‘‘۔میں نے ایک مولوی صاحب کی تقریر سنی، انھوں نے کہا: جو شخص حضور صلی اللہ علیہ وسلم کی شریعت پر ایمان نہیں رکھے گا، اس کا ٹھکانا دوزخ ہے، خواہ وہ کتنا ہی نیک کیوں نہ ہو۔ ازراہ کرم رہنمائی فرما دیجیے۔(محمد کامران مرزا)

جواب: آپ کے سوال کے دو حصے ہیں: ایک حصہ قرآن مجید کی ایک آیت کی مراد سے متعلق ہے اور دوسرا مولوی صاحب کی راے پر مشتمل ہے۔ جہاں تک آیت کریمہ کا تعلق ہے تو اس میں نجات اخروی کا اصل الاصول بیان کیا گیا ہے۔ ہماری ایمانیات کی اصل صرف یہ ہے کہ ہم اس کائنات کے خالق ومالک کے وجود اور اس کے حضور جواب دہی پر ایمان رکھتے ہوں۔ کتابوں، فرشتوں اور نبیوں پر ایمان اس ایمان کے ایک تقاضے کی حیثیت سے سامنے آتا ہے (ان تین چیزوں میں بھی اصل کی حیثیت انبیا کی ہے۔ کتابوں اور فرشتوں پر ایمان اس کے لواحق میں سے ہے)، لیکن یہ تقاضا ایک ایسا تقاضا ہے جس کے پورا نہ کرنے کا نتیجہ جہنم کی صورت میں نکلتا ہے۔ چنانچہ ہمارے نزدیک اگر کسی پر یہ واضح ہے کہ فلاں ہستی خدا کا پیغمبر ہے اس کے باوجود وہ اس کو خدا کا پیغمبر نہیں مانتا اور اس کے لائے ہوئے دین کو اختیار نہیں کر لیتا تو اس کی نیکیاں اور خدا اور آخرت پر ایمان اکارت چلا جائے گا۔
اس وضاحت سے آپ یہ بات سمجھ گئے ہوں گے کہ مولوی صاحب کی بات ادھوری ہے۔ پوری بات یہ ہے کہ ہر وہ نیک غیر مسلم جس کو نبی صلی اللہ علیہ وسلم کے سچے پیغمبر ہونے کا یقین ہے، وہ اگر مسلمان نہیں ہوتا تو وہ ایک سنگین جرم کا ارتکاب کر رہا ہے۔ اس کا نتیجہ یہ بھی نکل سکتا ہے کہ اس کی ساری نیکیاں رد کر دی جائیں اور عذاب میں مبتلا کر دیا جائے۔

Advertisements

One thought on “کافر اور غیر مسلم میں فرق

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s

%d bloggers like this: